Duniya Mere Khilaf Thi Tun Bhi Khilaf Ha

 Duniya Mere Khilaf Thi Tun Bhi Khilaf Ha

Ye Sach Nahi Ha Ha Tu Mijhy Ikhtlaf Ha

Jo Bhi Kare Jahan Bhi Kare Kis Trah Kare

Es Ko Meri Traf Se Sabhi Kuch Maaf Ha

Bheegy Hoy Hain Daman Aur Amal Astin 

Hala Keh Asman Ha Matla Bhi Saaf Ha 

Awaz He Suni Na Ho Jis Shakhs Ne Kabhi

Es Ke Liye Main Jo Bhi Kahun Inkshaf Ha

دنیا میرے خلاف تھی تو بھی خلاف ہے

یہ سچ نہیں ہے ہے تو مجھے اختلاف ہے

جو بھی کرے جہاں بھی کرے جس طرح کرے

اس کو میری طرف سے سبھی کچھ معاف ہے

بھیگے ہوۓ ہیں دامن اور اعمال آستی

حالانکہ آسماں ہے متلہ بھی صاف ہے

آواز ہی سنی نہ ہو جس شخص نے کبھی

اس کے لیے میں جو بھی کہو انقشاف ہے





Post a Comment

Previous Post Next Post